Select your Top Menu from wp menus

ڈاکٹرہرش وردھن نے مغربی بنگال میں ڈاکٹروں کےساتھ مارپیٹ کے واقعہ پرگہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے اسپتالوں میں کام کا ایک محفوظ ماحول فراہم کرانے کی کرائی یقین دہانی

ڈاکٹرہرش وردھن نے مغربی بنگال میں ڈاکٹروں کےساتھ مارپیٹ کے واقعہ پرگہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے اسپتالوں میں کام کا ایک محفوظ ماحول فراہم کرانے کی کرائی یقین دہانی

یواین آئی


نئی دہلی ،14جون :وزیرصحت ڈاکٹرہرش وردھن نے مغربی بنگال میں ڈاکٹروں کےساتھ مارپیٹ کے واقعہ پرگہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے اسپتالوں میں کام کا ایک محفوظ ماحول فراہم کرانے کی یقین دہانی کرائی اور اس سلسلہ میں ریاست کی وزیراعلی سے بات چیت کریں گے ۔ڈاکٹر ہرش وردھن نے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس)،صفدرجنگ اسپتال ،ڈاکٹر رام منوہر لوہیا اسپتال ،یونائیٹڈ ریزیڈنٹ اینڈ ڈاکٹر س ایسوسی ایشن آف انڈیا اور فیڈریشن آف ریزیڈنٹ ڈاکٹر ایسوسی ایشن کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے مغربی بنگال میں ڈاکٹروں کےساتھ ہونے والے سلوک کی سخت مذمت کی اور کہاکہ اس سلسلہ میں وہ مغربی بنگال کی وزیراعلی ممتابنرجی سے بات چیت کریں گے ۔مرکزی وزیر نے اس سلسلہ میں محترمہ بنرجی کو خط بھی لکھاہے اور ان سے ہڑتال کررہے ڈاکٹرں کے ساتھ بات چیت کرکے معاملہ کا خوشگوار ماحول میں حل نکالنے اور ڈاکٹرں کو کام کے لیے محفوظ ماحول فراہم کرانے کی درخواست کی ہے ۔انھوں نے کہاکہ ڈاکٹروں کی ہڑتال سے ملک بھر میں مریضوں کو پریشانی ہورہی ہے اور ہیلتھ خدمات پر اثر پڑاہے ۔انھوں نے کہاکہ اسپتالوں میں ڈاکٹروں کے تحفظ کا معاملہ وہ وزیرداخلہ کے سامنے اٹھائیں گے ۔اس کے ساتھ ہی اس سلسلہ میں ملک کی سبھی ریاستوں کے وزرائے اعلی اور وزرائے صحت سے بھی بات چیت کریں گے ۔ڈاکٹر ہرشن وردھن نے ڈاکٹروں اور خاص طور سے مغربی بنگال کے ڈاکٹروں سے مریضوں کے مفاد میں ہڑتال نہ کرنے اور احتجاج کا دوسرا طریقہ اختیار کرنے کی اپیل کی ۔

HTML Snippets Powered By : XYZScripts.com