Select your Top Menu from wp menus

نقوی نے کانگریس پر سخت حملہ کرتے ہوئے آج کہا کہ وہ لوک سبھا کے انتخابات میں ملنے والے ’مینڈٹ‘ پر خود احتسابی کرنے کے بجائے اس کی توہین کر رہی ہے

نقوی نے کانگریس پر سخت حملہ کرتے ہوئے آج کہا کہ وہ لوک سبھا کے انتخابات میں ملنے والے ’مینڈٹ‘ پر خود احتسابی کرنے کے بجائے اس کی توہین کر رہی ہے

یو این آئی


نئی دہلی، 14 جون : اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کانگریس پر سخت حملہ کرتے ہوئے آج کہا کہ وہ لوک سبھا کے انتخابات میں ملنے والے ’مینڈٹ‘ پر خود احتسابی کرنے کے بجائے اس کی توہین کر رہی ہے۔
مسٹر نقوی نے نامہ نگاروں کے ساتھ بات چیت میں کہا کہ کانگریس کو سمجھناہوگا کہ شکست کی’ ہیٹ اسٹروک‘ کا علاج پزہ نہیں پیاز ہے۔ کانگریس کے دوست جب تک اس’ دیسی‘ حقیقت کو نہیں سمجھیں گے، تب تک ’’کانگریس کی لفاظی ’لو‘ کی زد میں آتی رہے گی‘‘۔
انہوں نے کہا کہ کانگریس آج عوامی رائے پر خود احتسابی کے بجائے غرور کا راستہ اپنا رہی ہے اور مینڈیٹ کی توہین کرنے کی بجائے ’جگاڑ‘کا راستہ اختیار کررہی ہے۔
اقلیتی امور کے وزیر نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر ماتم کرنے والی ’منڈلی‘ دوبارہ فعال ہوگئی ہے۔ پہلے ای وی ایم، وی وی پیٹ پرچی ملانے کا مطالبہ کیا ۔ جب ای وی ایم – وی وی پیٹ پرچیوں کے ملانے میں کہیں بھی کوئی فرق نہیں ملا تو شرمندگی کے بجائے نیا عذر کی تلاش شروع کردی۔
مسٹر نقوی نے کہا کہ جس منفی سیاست نے ’ گرینڈاولڈ پارٹی‘ کو ’برانڈ نیو نیا فلاپ شو ‘ بنادیا ہے، اگر وہ زمینی حقائق اور ماحول کو سمجھے بغیر چلتے رہیں گے تو انکا بچا کھچا وجود بھی باقی نہیں رہے گا۔