Select your Top Menu from wp menus

اب ممتا بنرجی کی بایو پک پر تنازع

اب ممتا بنرجی کی بایو پک پر تنازع
کولکاتا17اپریل: اس فلم میں ممتا بنرجی کے بچپن سے لیکر سیاست میں آنے اور مغربی بنگال کی پہلی خاتون وزیراعلیٰ بننے تک کا سفر فلمایا گیا ہے۔ اداکارہ روما چکرورتی نے اس فلم میں مرکزی کردار نبھایا ہے۔ الیکشن کے گرما گرمی والے ماحول میں الیکشن کمیشن نے وزیراعظم نریندر مودی کی زندگی پر مبنی فلم کی ریلیز پر روک لگا دی ہے، اب مزید ایک سیاسی رہنما کی بایوپک ریلیز کی دہلیز پر کھڑی ہے۔ بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی کی زندگی پر مبنی فلم ’’باگھنی:بنگال ٹائیگریس‘‘ نامی فلم 3 مئی کو ریلیز ہونے والی ہے۔ سی پی آئی نے الیکشن کمیش سے فلم کی ریلیز پر پابندی عائد کرنے کی مانگ کی ہے۔ واضح رہے کہ مغربی بنگال میں 6 مئی اور 12 مئی کو ووٹنگ ہوگی اور ووٹنگ سے ایک ہفتہ قبل فلم کا ریلیز ہونا تنازعہ کو جنم دیتا ہے۔ حالانکہ فلم کی اداکارہ اور ہدایتکار نے کہا کہ یہ فلم پوری طرح سے بایوپک نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ یہ فلم مودی کی بایوپک کی طرح نہیں ہے بلکہ ممتا بنرجی کی زندگی سے متاثر ہوکر بنائی گئی ہے کیوں کہ ممتا بنرجی ایک بہت بڑی ہستی ہیں۔ فلم کی اسکرین رائیٹر اور فلمساز پنکی پال نے کہ کہ چاہے سروجنی نائیڈو ہو یا پھر جے للیتاہوں ان سبھی کی اپنی اپنی کہانی ہے اور یہ ملک کی سبھی خواتین کو متاثر کرتی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ یہ فلم کوئی پروپیگنڈا نہیں ہے اور سینسر بورڈ سے سرٹیفکیٹ ملنا اس بات کا ثبوت ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل الیکشن کمیشن نے وزیراعظم نریندر مودی کی بایوپک کی ریلیز پر پابندی لگائی ہے۔
  • 1
    Share
  • 1
    Share