Select your Top Menu from wp menus

قرآن میں سب سے زیادہ احکام اللہ تبارک وتعالی نے میاں بیوی سے متعلق بیان فرمایا ہے,مولانا قاسم مظفرپوری

قرآن میں سب سے زیادہ احکام اللہ تبارک وتعالی نے میاں بیوی سے متعلق بیان فرمایا ہے,مولانا قاسم مظفرپوری
اطاعت گزار بیوی اللہ تبارک وتعالی کی عظیم نعمت ہے,قاری شبیر,
نکاح کی تقریب سے علماء کرام کا عوام الناس سے بصیرت افروز خطاب
عبدالخالق القاسمی/اسٹارنیوزٹوڈے
مظفرپور14 مارچ,آج بروز جمعرات الحاج مولانا عبیدالرحمن صاحب کا لڑکا عزیزی مولانا لطف الرحمن القاسمی کی شادی خانہ آبادی حافظ نور الحسن عرف گلاب صاحب بھگوتی پور کی دختر نیک سے طے پائی جس میں بڑی تعداد میں سیاسی,سماجی,مذہبی,و ملی قائدین نے شرکت کی,اس تقریب کا باضابطہ آغاز قرآن پاک کی تلاوت سے ہوا جبکہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں ایک چھوٹا معصوم بچہ عزیزی ارمان سلمہ نے مدح سرائی کی جس کو سامعین نے خوب سراہا اور دادو تحسین اور انعامات سے نوازا,اس مبارک موقع پر مدرسہ اسلامیہ شکرپور بھروارہ کے روح رواں حضرت قاری شبیر احمد صاحب نے,قرآن و حدیث کی روشنی میں مدلل اور مفصل بیان کرتے ہوئے کہا کہ اولاد ہونے کی حیثیت پوری دنیا حضرت آدم علیہ السلام کی نسل ہے,اور اس دنیا میں جتنے نبی آئے سب نے نکاح کیا گویا نکاح سارے انبیاء کی سنت ہے,نکاح قدرت کا عظیم مظہر ہے,نکاح کا رشتہ جونہی وجود میں آتا ہے ویسے ہی میاں بیوی کے اوپر ایک دوسرے کے حقوق کے تعلق سے  ذمہ داری عائد ہوتی ہے,انہوں نے حدیث کا حوالہ دیتے ہوئے فرمایا کہ تم میں بہترین وہ شخص ہے جو اپنے عورتوں میں اچھا ہو,وہیں انہوں نے مولانا لطف الرحمن القاسمی کو رشتہ ازدواج سے منسلک ہونے پر دلی مبارکبادی پیش کی اور دعائیں دیں,نیز اس موقع پر حضرت مولانا قاسم مظفرپوری قاضی شریعت دارالقضاء امارت شرعیہ پٹنہ اریسہ,ورکن آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے نکاح کی تقریب میں شریک لوگوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ,ہم یہاں انواع اقسام  کا کھانا کھانے نہیں آئے ہیں بلکہ ہمارا اور آپ کا یہاں جمع ہونا نکاح جیسی عظیم نعمت کے تعلق سے ہوا ہے,ہم خاندان کے رشتوں کے تعلق سے دعا کے لئے آئے ہیں,قرآن کی روشنی میں احکام بیان کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تبارک وتعالی نے مہر دین,نکاح,طلاق,وراثت کس سے نکاح کرنا ہے اور کس سے نکاح نہیں کرنا ہے,نکاح کیسے کیا جائے گا اور کیسے ختم کیا جائے گا ان سب چیزوں کو اللہ تبارک وتعالی نے قرآن میں تفصیل کے ساتھ ذکر کیا ہے,جسے ہم قرآن پڑھ کر ہی حاصل کر سکتے ہیں, سارے مسائل قرآن کے اندر موجود ہیں,ہم اپنے مسائل قرآن سے حل کریں کریں,قرآن پر عمل کرکے ہی ہم صحیح زندگی گزار سکتے ہیں,حضرت نے اپنے بیان کے آخری کڑی میں قرآن کی اس آیت کی تلاوت کرتے ہوئے کہا کہ (اے لوگوں اللہ سے ڈرو جس نے تم کو ایک جان سے پیدا فرمایا پہر بنایا تمہارا جوڑا)آخر تک رشتہ کے معاملہ میں ہر انسان کو اللہ تبارک وتعالی سے ڈرنا چاہیے,عام طور پر شادی کے بعد بال بچے والدین کو بھول جاتے ہیں,اس لئے رشتہ داری کے معاملے میں اللہ تبارک وتعالی سے ڈرنی چاہیے,جو شخص رشتوں کا احترام کرتا ہے اللہ اس کی عمر کو بڑھا دیتا ہے,وہیں اس تقریب سے مولانا محفوظ الرحمن القاسمی نے فکر انگیز خطاب کرتے ہوئے آپسی اختلاف و انتشار کو ختم کرکے ایک پلیٹ فارم پر جمع ہونے کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیا,اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ آج مسلمان اپنی اصلی شناخت سے دور ہوتا جا رہا ہے,یہی وجہ ہیکہ انارکی پیدا ہو رہی ہے اور موب لنچنگ کے شکار ہو رہے ہیں,وہیں مسلم معاشرے میں دینی تعلیم کا فقدان ہے جس سے ہمارا معاشرہ بری طرح متاثر ہے,ہمیں اچھے معاشرے کی تشکیل کے لئے تعلیمی بیداری لانے کی ضروت ہے,مولانا قاسم مظفرپوری کی رقت آمیز دعا پر مجلس کا اختتام عمل میں آیا,اس موقع پر نو عروس جوڑے کو مولانا بدر الاسلام القاسمی,مولانا تقی احمد القاسمی,حافظ منت اللہ رحمانی,قاری بلال احمد مظاہری,مولانا اسرار مظاہری, مولانا فضل اللہ ندوی,مولانا ممتاز القاسمی,حافظ عبدالباری,حافظ توصیف,حافظ افتخار,حاجی ساجد,حافظ ثناءاللہ,ڈاکٹر خسرو,ماسٹر شمیم,مولانا ریاض القاسمی,مولانا اخلاق الرحمن القاسمی سمیت اعزہ اقارب نے دلی مبارکبادی پیش کی اور ڈھیر ساری دعاؤں سے نوازا
  • 1
    Share
  • 1
    Share