Select your Top Menu from wp menus

سوال کرنا آسان لیکن جواب دیا نہیں جاتا مودی جی آپ سے

سوال کرنا آسان لیکن جواب دیا نہیں جاتا مودی جی آپ سے
ابن بھٹکلی
2014 عام انتخاب سے پہلے گجرات چیف منسٹر رہتے نریندر مودی نے اس وقت کے ہندستانی کانگریسی پرائم منسٹر شری من موہن جی سے مندرجہ ذیل 4 سوال نہ صرف پوچھے تھے بلکہ 2014 ہر انتخابی سبھاؤں میں یہی سوال دہرا دہرا کر دیش واسیوں کو کانگریس راج سے متنفر کر، دہلی کی گدی ہتھیانے میں کامیاب رہے تھے
شری نریندر مودی کے بحثیت پانچ سالہ سنگھی دور حکومت میں، سابقہ کانگریس حکومت کے مقابلے دیش کی سیما پر فوجیوں کے شہید ہونے کی گھٹناوں کو دیکھتے ہوئے،2014 مودی جی کے منموہن سرکار کو پوچھے 4 سوالات، دیش کی سو کروڑ جنتا آج پرائم منسٹر آف انڈیا 56″ سینے والے مہان شکتی سالی شری نریندر مودی جی سے پوچھنا چاہ رہی ہے۔ کیا مودی جی کے پوچھے ان کے اپنے 4 سوالوں کا جواب اب پرائم منسٹر مودی جی کے پاس ہیں؟ کیا رام راجیہ پرتیک شدت پسند ہندو راج قائم کرنے کی فکر میں غرقاں آر ایس ایس بی جےپی مودی جی کے پاس ان کے اپنے سوالات کے جوابات ہیں؟
2014 مودی جی من موہن سنگھ کو پوچھے گئے 4 سوالات خود مودی جی کی زبانی
یہ جو آتنکی ہیں یہ جو نکسل وادی ہیں ان کے پاس بارود کہاں سے آتا ہے۔ بولو ودیش کی دھرتی سے آتا ہے.  اور دیش کی سیمائیں سمپورن روپ سے آپ کے قبضے میں ہیں۔ سیما سورکهشہ بل آپ کے قبضہ میں ہے۔یہ جو آپ کے قبضہ میں اسے تو آپ سنبھالو اور ودیش سے جو بارود آتا پے اور آتنک وادیوں کے پاس پہنچ جاتا ہے اس کو تو روکو۔جواب نہیں ہے.
 میں نے ان کو دوسرا سوال پوچھا ہم نے کہا آتنک وادیوں کے پاس دھن آتا ہے  فارئن سے آتا پے پورا منی ٹرانزیکشن کا کاروبار بھارت سرکار کے قبضہ میں  ہے۔آر بی کے انڈر میں ہے بنکوں کے مادهیم سے ہوتا ہے کیا ہندستان کے پردھان منتری اتنی بھی نگرانی نہیں رکھ سکتے؟ یہ جو دھن ودیش سے آکر آتنکوادئوں تک پہنچتا پے آپ کے ہاتھ  میں ہے۔  راجیہ سرکاریں اس میں کہیں بیچ میں نہیں آتے آپ اس کو کیوں نہیں روکتے ہو؟ کیوں نہیں پکڑ پاتے ہو؟ آپ اس کے لئے کیا کرنا چاہتے ہو؟
 میں نے تیسرا سوال ان سے پوچھا کہ ودیشوں سے گھس پیٹئے آتے ہیں. گھس پیٹیئے  آتنک وادیوں کی روپ میں آتے ہیں آتنک وادی گهٹنائیں کرتے ہیں اور  بھاگ جاتے ہیں۔ پردھان منتری جی مجھے بتائیے. .دیش کی سیمائیں سمپورن روپ سے آپ کے قبضے میں ہیں۔سیکیورٹی ایجنسیاں  آپ کے ہاتھ میں ہے۔ بی ایس ایف، سینا سب آپ کے ہاتھ میں ہے۔ نیوی آپ کے ہاتھ میں ہے پھر بھی گھس پیٹیئے کیسے دیش میں داخل ہوپاتے ہیں. آتنک وادی کیسے دیش میں گھس پاتے ہیں آپ جواب دیں دیش کے پرائم منسٹر جی. آپ جواب دیں. دیش کی ویوستها آپ کے پاس ہے ان کے پاس نہیں.جواب نہیں تھا
میں نے چوتھا سوال پوچھا۔ میں نے ان سے پوچھا پردھان منتری جی بتائیے سارا کمیونیکیشن بھارت سرکار کے انڈر میں ہے   کوئی بھی اگر ٹیلیفون کرتا پے آئ میل بھیجتا پے کوئی بھی کمیونیکیشن  کرتا ہے بھارت سرکار اس کو انٹرپت کرسکتی ہے. انٹرپت کرکے جانکاری حاصل کرسکتی ہے۔  آتنک وادی گتی ودی کے اندر کونسا کمیونیکیشن چل رہا ہے اور آپ اسے روک سکتے ہو۔ میں آپ سے پوچهناچاہتاہوں دیش کے پرائم منسٹر جی! اس وشئے میں آپ نے کیا کیا ہے؟ ان کے پاس جواب نہیں تھا
اب دو ایک مہینوں بعد ایک مرتبہ پھر دیش بھر میں عام انتخاب ہونے جارہا ہے۔ یہ سنگھی لیڈران اپنی بڑی بڑی پھینکو باتیں لے کر ایک مرتبہ پھر آپ کے پاس آئینگے۔ جب بھی یہ سنگھی آپ کے پاس آئیں تو من موہن سرکار سے پوچھے ان کے اپنے چار سوالات آپ اس دیش کی جنتا ان سے پوچھے اور دیکھے کیا جواب دیتے ہیں۔ ان کے اپنے 5 سالہ دور اقتدار کے نظم و ضبط پر آپ کے پوچھے ان سوالوں کو اطمینان بخش جواب اگر یہ سنگھی حکمران دے نہیں پاتے ہیں تو آپ  بھی انہیں اپنے قیمتی ووٹوں سے محروم رکھ دیش کی سپتھا سے باہر کا راستہ دکھلا دیجئے
  • 1
    Share
  • 1
    Share