Select your Top Menu from wp menus

بائک چوری کا اب تک نہیں لگا کوئی سراغ,پولس افسران برت رہیں غفلت,جرائم پیشہ افراد کا حوصلہ بلند.

بائک چوری کا اب تک نہیں لگا کوئی سراغ,پولس افسران برت رہیں غفلت,جرائم پیشہ افراد کا حوصلہ بلند.
عبدالخالق القاسمی/اسٹارنیوزٹوڈے
مظفرپور/13 فروری ضلع کے اورائی حلقہ کے راجکھنڈ اتری پنچایت بلیا گاؤں کے مدرسہ بحرالعلوم سے ہوئی بائک چوری کا سراغ اب تک نہیں لگ سکا جو پولس اہلکار سمیت افسران پر سوالیہ نشان ہے,ایف آر درج کرائے ہوئے ایک ہفتہ سے زیادہ  کا وقفہ ہوگیا مگر اس پر کوئی کاروائی نہیں ہوسکی,جرائم پیشہ افراد دندناتے پھر رہے ہیں,جب چاہتے ہیں بڑے واردات کو انجام دے دیتے ہیں,اور افسران چپی سادھے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں,چور کا حوصلہ اتنا بلند ہو چکا ہے کہ بے خوف درو دیوار کو پھاند کر چوری جیسے واردات کو انجام دے رہے ہیں,مسلسل چوری کے کئی واردات کی وجہ سے اردگرد کے لوگوں میں خوف دہشت کا ماحول ہے,واضح رہے کہ منگل کی دیر رات اورائی بلک حلقہ کے بلیا گاؤں کے مدرسہ بحرالعلوم سے حافظ عبداللہ کی گاڑی چوری ہوگئی حافظ عبداللہ نے بروقت پولیس اسٹیشن اورائی میں جاکر ایف آئی آر بھی کروا یا,پولس جائے حادثہ پر پہونچنے کے بجائے لیپا پوتی کا کام کررہی ہے,وہیں کچھ لوگوں نے پولس اہلکار پر چوروں کے تئیں نرمی برتنے کا الزام لگایا ہے,مدرسہ کے مہتمم حافظ عبدالسلام نے بتایا کہ اس سلسلے میں کئی سیاسی,سماجی لوگوں سے بھی رابطہ قائم کیا وہیں مقامی ایم ایل سریندر رائے سے بھی گہار لگائی مگر انہوں نے ایک نہ سنی,وہیں پولیس انچارج رابندر رائے سے بھی بات کیا,مگر لوگوں نے لیپا پوتی کا کام کیا,وہ بیچارہ غریب تنکہ تنکہ جمع کرکے گاڑی خریدا تھا اس کا شوق پورا بھی نہ ہوا تھا کہ گاڑی چوڑی ہوگئی,کیا چور چوری کرتا رہے اور افسران خواب خرگوش کی نیند سوتے رہیں کیا اس سے امن و امان قائم ہوپائے گا,اس سے پہلے گذشتہ 18 جنوری. جمعہ کی دیر شام جرائم پیشہ افراد نے اورائی تھانہ حلقہ کے بشنپور چوک پر ہندی روزنامہ اخبار بربھات خبر کے مقامی رپورٹر پر قاتلانہ حملہ کرکے موٹرسائیکل سمیت کئی قیمتی اشیاء اور نقد روپے چھین لیے تھے,جب کہ جائے واردات پولیس اسٹیشن سے محض دو کیلو میٹر فاصلہ پر ہے,کیا ایسے میں پولیس اہلکار ذمہ دار نہیں ہیں؟کیا یہ واقعہ اورائی حلقہ کے لئے حیرت انگیز نہیں ہے؟مولانا عبدالسلام صاحب نے کہا کہ اگر ایک ہفتہ کے اندر چوری کی گئی بائک برآمد نہیں کی گئی کہ ہم خاموش نہیں رہینگے,اور سڑکوں پر اترینگے,
  • 1
    Share
  • 1
    Share