Select your Top Menu from wp menus

بیسویں صدی کے عظیم مفکر ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کے نظریات پر لکھی گئی کتاب ” اسلام اور معلومات “ پر آئی او ایس میں خصوصی محاضرہ  پروفیسر حمید نسیم رفیع آبادی نے پیش کیاتفصیلی تبصرہ ۔توحید کے موضوع پر معرکة الآراءکتاب بتایا 

بیسویں صدی کے عظیم مفکر ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کے نظریات پر لکھی گئی کتاب ” اسلام اور معلومات “ پر آئی او ایس میں خصوصی محاضرہ  پروفیسر حمید نسیم رفیع آبادی نے پیش کیاتفصیلی تبصرہ ۔توحید کے موضوع پر معرکة الآراءکتاب بتایا 
نئی دہلی۔8فروری (پریس ریلیز)
بیسویں صدی کے عظیم مفکر اور اسلامی اسکالر ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کے نظریات پر ڈاکٹر امتیازی یوسفی کی لکھی ہوئی کتاب” اسلام اور معلومات“ پر آج انسٹی ٹیوٹ آف آبجیکٹیو اسٹڈیز میں ایک خصوصی محاضرہ کا انعقا دکیاگیاجس میں پروفیسر حمید نسیم رفیع آبادی صدرشعبہ مطالعہ مذاہب سینٹرل یونیورسیٹی کشمیر نے تفصیلی اور معلومات تبصرہ پیش کیا ۔اپنے تبصرہ میں پروفیسر حمید نسیم رفیع آبادی نے بتایاکہ ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کی کتاب ” اسلام اور معلومات “ اسلام اور توحید کے موضوع پر معرکة الاراءتصنیف ہے جس میں انہوں نے توحید کے مختلف شعبوں ، اسلامی عقائد اور دیگر امور پر تفصیلی بحث کی ہے ۔ان کا یہ نظریہ متعدد ممالک کی یونیورسٹیز کے شعبہ اسلامیات میں نصاب کا حصہ ہے اور اسے خصوصی اہمیت حاصل ہے ۔خاص طور پر انہوں نے جو توحید پر بحث کی ہے اسے خصوصی اور نمایاں مقام حاصل ہے ۔انور ابراہیم ،خورشید عالم سمیت متعدد عظیم اسکالروں نے ان کے نظریات سے اتفاق کرتے ہوئے اپنے مضامین اور کتابوں میں اس کا تذکرہ کیاہے ۔ ان کی ایک خصوصیت یہ بھی ہے کہ توحید کے حوالے سے تمام ترگفتگو انہوں نے قرآنی علوم کے دائرے میں رہتے ہوئے کی ہے جبکہ ایسے کئی اسکالرس ہیں جنہوں نے توحید کا فلسفہ پیش کرتے ہوئے قرآن کے بجائے عقلی دلائل سے کام لیاہے ۔پروفیسر حمید نسیم رفیع آباد ی نے مزید کہاکہ ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کی ایک اہم خصوصیت یہ بھی ہے کہ انہو ںنے اسلام کی صحیح تشریح ،جدید یت اور زمانے کے تقاضوں کو سامنے رکھتے ہوئے کی ہے۔ کبھی بھی اسلام کے بنیادی اصولوںسے سمجھوتہ نہیں کیاہے ۔امریکہ میں رہنے کے باوجود انہوں نے خود کو امریکی کلچر میں ڈھلنے کے بجائے دوسروں کے سامنے اسلام کے عظیم نظریہ اور ثقافت کو پیش کیا ۔ انہوں نے اپنی کتاب میں ہر بچہ فطرت اسلام پر پیدا ہوتاہے “اس کی بھی خوبصورت تشریح کی ہے اور امام غزالی رحمة اللہ علیہ سے ہٹ کر انہو ں نے ایک تشریح کی ہے ۔پروفیسر رفیع آبادی نے کہاکہ یہ کتاب بہت اہم ہے ،اسلامیا ت پر کام کرنے والوں کو اس کا مطالعہ کرنا چاہیئے اور اس پر مزید لیکچر کی ضرروت ہے ۔
پروفیسر افضل وانی وائس چیرمین آئی او ایس نے تقریب کی صدارت کی اور اپنے صدارتی خطاب میں کہاکہ ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی عظیم دانشور ،مصنف اور مفکر تھے ان کے نظریات عصرحاضر کیلئے مشعل اور اہم معلومات پر مبنی ہیں ۔اسے زیادہ سے زیادہ سے فروغ دینے اور عام کرنے کی ضرورت ہے ۔ڈاکٹر محمد منظور عالم چیرمین آئی او ایس نے اس موضوع پر مزید دو لیکچر منعقد کئے کی منظور ی دیتے ہوئے کہاکہ توحید کے موضوع پر گذشتہ چند برسوں میں متعدد کتابیں لکھی گئی ہیں جس میں یہ کتاب سب سے زیادہ اہم اور معرکة الاراءہے ۔اس میں انہوں نے تمام چیزوں کا خالق اللہ کی ذات کو بتایاگیا ہے جہاں سے انصاف ،مساوات اور آزادی کا تصور ابھر کر سامنے آتاہے اور آج کی دنیا میں اسے بطور دلیل کے پیش کیا جاتاہے ۔ انہو ںنے یہ بھی بتایاکہ سوچ اور فکرزمانے کے تقاضے کے مطابق پروان چڑھتی رہتی ہے ۔اس موقع پر پروفیسر محسن عثمانی ندوی نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔علاو ازیں پروفیسر زیڈ ایم خان جنرل سکریٹری آئی او ایس ، پروفیسر حسینہ حاشیہ اسسٹنٹ جنرل سکریٹری آئی او ایس ۔ مولانا عبد الحمید نعمانی ۔ صحافی صفی اختر ۔ شمس تبریز قاسمی ۔ جاوید مسعودقاسمی سمیت متعدد اسکالرس شریک تھے ۔ قبل ازیں پروگرام کا آغاز مولانا اطہر حسین ندی کی تلاوت سے ہوا ۔نظامت کا فریضہ مولانا شاہ اجمل فاروق ندو ی نے انجام دیا ۔
واضح رہے کہ ڈاکٹر اسماعیل راجی الفاروقی کی شخصیت اور خدمات کے موضوع پر گذشتہ سال آئی او ایس کے زیر اہتمام ایک بین لاقوامی سمینار کا بھی دہلی میں انعقاد ہوچکاہے جس میں ملک وبیرون ملک کے متعدد اسکالرس نے شرکت کی تھی ۔