Select your Top Menu from wp menus

نہ ستائش کی تمنا نہ صلے کی پروا۔۔

نہ ستائش کی تمنا نہ صلے کی پروا۔۔

دوستوں! گزشتہ دو تین ماہ سے بہت پریشان رہا، بلکہ اگر یوں کہوں کہ اتنا پریشان کبھی نہیں رہا، تو مغالطہ نہ ہوگا۔میں پریشان ہوں اس کی جانکاری تب مجھے ہوتی ہے ، جب میں کچھ لکھ نہیں پاتا ، آپ لوگ بھی بخوبی اس بات کے گواہ ہیں گزشتہ دو تین ماہ سے میں قاعدے سے کچھ نہیں لکھ پایا۔ منصوبے تو بنا لیے ،لیکن وہ پروان نہیں چڑھ پا رہے تھے اور ایسا کبھی ہوتا نہیں ہے کہ میں کچھ پلان کروں اور وہ نہ ہو پائے کیونکہ میں زمینی حقائق کو ذہن مین رکھ کر ہی کوئی منصوبہ بناتا ہوں ، تاہم اس منصوبے کو مستحکم نہیں کر پاتا کہ جو میں سوچتا ہوں چیزیں اس سے آگے کی ہوتی ہیں۔ ظاہر ہے کہ اتنے وسائل نہیں ہوتے کہ اسے عملی جامہ پہنا سکوں۔ اللہ کا ایک کرم میرے ساتھ اب تک رہا ہے کہ مجھے دوست اچھے ملے ہیں ، معاون و مددگار اور اب تک شاید ہی مجھ سے کسی کو تکلیف پہنچی ہو اور مجھے یاد نہیں ہے کہ میرے ساتھ رہنے والوں نے مجھے کبھی دھوکہ دیا ہو۔ میرے جاننے والے جانتے ہیں کہ میں پریشان ہونے والا آدمی نہیں ہوں، تاہم وسائل کے مسائل سے کسے جوجھنا نہیں پڑتا ، کون ہے جو اپنی ساری زندگی آسانی سے گزار لیتا ہے ، شاید کوئی نہیں۔
میں بھی نہیں ۔ اللہ کا کرم ، ایک واقعہ سنانا چاہتا ہوں۔ شاید آپ کے کام آجائے۔
جب سارے وہ راستے بند ہو گئے ، جس پر اب تک چلتا رہا تھا ، یعنی کچھ لکھ لکھا کر جو کماتا تھا وہ ’مسلم دنیا‘ کے سمٹ جانے کے بعد ختم ہو گئے تھے تو بے حد پریشانی کی حالت میں مفتی صاحب کے پاس چلا گیا ، ان سے اپنی روداد بیان کی ، یہاں تک کہا کہ میں دلی چھوڑ کر کسی انجان جگہ پر جانا چاہتا ہوں ، جہاں میں ہوں اور میرا ہمزاد اور کوئی نہ ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ انہوں نے بغور میری باتیں سنیں اور کہا کہ آپ میری ایک بات مانیں گے ۔ میں نے کہا میں اس حالت میں نہیں ہوں کہ میں کسی بات سے انکار کر سکوں۔ انہوں نے کہا آپ کے لیے مشکل ہے ، لیکن ناممکن نہیں۔ میں نے کہا فرمایئے ، میرے بس میں ہوگا تو میں ضرور کروں گا۔
انہوں نے کہا گھر جایئے ، دو رکعت نماز پڑھئے ، پہلے رکعت میں قل یایھالاکٰفرون کی سورۃ لگایئے ، پھر قل ھو اللہ احد اور نماز کے بعد اللہ سے صرف یہ مانگئے کہ اے اللہ میرے حلال رزق کا انتظام کر دیں۔ انشا اللہ اللہ آپ کی سنے گا۔اس کے بعد تین سو روپے کسی معذور فقیر کو عنایت کیجئے۔
اپنی عادت سے مجبور میں نے ان سے کہا یہ کر سکتا ہوں ، لییکن اس میں تین مسئلہ ہے ۔ ایک تو یہ کہ ابھی سردی کی رات ہے اور میں ناپاک ہوں ، دوسرے قل یا یھاالکٰفرون مجھے ٹھیک سے یاد نہیں ہے ، تیسرے معذور فقیر کو ڈھونڈنا بھی آسان نہیں ہے کہ انسان کسی طرح معذور ہوتا ہے تبھی فقیر ہوتا ہے ان میں اصلی معذور کو کیسے ڈھونڈوں۔ انہوں نے کہا اب مذاق نہیں ، جو کہا گیا ہے اسے کیجئے۔
وہاں سے آیا ، پانی گرم کیا ، نہایا ،کلینڈر پر درج چار قل میں سے ایک قل کو ازبر کیا ، نماز پڑھی ، حلال رزق کی دعا مانگی۔ یقین مانئے دل ہلکا ہوگیا۔ صبح ایک معذور فقیر کو مشکل سے تلاش کیا اور اسے تین سو روپے دے دیئے۔ ہاٹ کیک اسٹوڈیو میں کچھ لوگ آئے ہوئے تھے ان سے ملاقات کے لیے چلا گیا۔ بارہ یا ایک بجے ہوں گے ، تبھی فون کی گھنٹی بجی ۔ آپ آج کل کہاں ہیں
میں نے کہا دہلی میں ہی ہوں ، وردھا جانے کا بالکل دل نہیں کرتا
جایئے بھی مت ۔ کام کرنا ہے۔
ہم مڈل کلاس لوگ کام کرنے کے لیےہی بنائے گئے ہیں ، فرمایئے ، جناب
مسلم دنیا پھر سے منظم ڈھنگ سے شروع کیجئے ، اور سنئے ہندی اور انگریزی میں بھی نکالئے، بجٹ بھیجئے آج رات تک ، کل فائینل ہو جائے گا۔
منہہ سے یکلخت نکلا ، اللہ میاں !
ٹھیک ہے جناب ، بھیجتا ہوں۔ میں نے فون بند کیا اور سیدھا اسٹوڈیو میں ہی اللہ کے حضور سجدہ ریز ہوا۔
اللہ میاں آپ یہی چاہتے تھے نا۔ دو رکعت نماز نماز تو تھی نہیں ، حاضری تھی ۔ رجسٹر میں میرے نام کے سامنے صاد لگانا چاہتے تھے نا آپ ۔ بھولے ہوئے کو گھر بلانا چاہتے تھے نا آپ۔ میں جانتا ہوں اللہ میاں! آپ مجھ سے بہت پیار کرتے ہیں ، تبھی تو انتہائی خراب حالات میں بھی آپ نے مجھے حرام خوری سے بچایا۔اللہ تعالیٰ یہ ٹھیک ہے کہ میں آپ کے حضور میں حاضر نہین ہوا ، لیکن میں شیطان سے بھی شکست نہیں کھایا۔ اسے بھی ہراتا رہا ۔ یہ طاقت آپ ہی مجھے دے رہے تھے اور اب تک دے رہے ہیں۔ اللہ و اکبر۔ آنکھیں بھیگی ہوئی تھیں۔ دوستوں نے ہمیں سجدہ سے اٹھایا۔
ہم اتنے بڑے کائنات کے ایک چھوٹے سے گولے کی اتنی چھوٹی سی ہستی کتنی جلدی اپنی اوقات بھول جاتے ہیں۔ احساس کی حساسیت نے روح کو جھنجھوڑ دیا۔
گھبرانا نہیں چاہیے ، کبھی بھی ، حالات کیسے بھی ہوں ۔ بس ایماندار رہیے ، اور دوسروں کو تکلیف مت دیجئے ۔ اچھا بنئے تاکہ سماج اچھا بنے ، قوم اچھی بن سکے ، بس دعا ہے کہ اللہ مجھے قوم کے لیے کوئی چھوٹا سا کام کرنے کی ہمت عطا کرے۔
دعا کا طالب
زین شمسی

  • 4
    Shares
  • 4
    Shares