فیس ماسک اور سینیٹائزرز کی اہمیت

0 47

فیس ماسک اور سینیٹائزرز کی اہمیت اس وقت تک ہے جب ان کا استعمال کرنے والا مکمل احتیاط کرے۔ یعنی اپنے چہرے کو ہاتھ نہ لگائے، کوئی بھی چیز کھانے پینے سے قبل ہاتھ اچھی طرح دھوئے، دوسرے سے گلے ملنے یا مصافحہ کرنے سے مکمل پرہیز کرے ۔ ۔ ۔ سوشل ڈسٹنسنگ یعنی سماجی فاصلہ قائم کرتے ہوئے ہر ممکن طور پر خود کو آئسو لیٹ کرلے۔ لیکن اگر لوگوں نے یہ کام نہیں کیا تو پھر چاہے سٹیل کا ماسک پہن لیں ، وائرس ہمارے جسم کے ہر ایک سوراخ سے اندر داخل ہوکر رہے گا۔

*آئیسولیشن خلوت نشینی اور گوشہ عا فیت کے حوالے سے۔۔۔ شعبِ ابی طالب کا ذکر … وہ سوشل بائیکاٹ تھا … یہ سوشل ڈسٹینسنگ ہے … لیکن آئیسولیشن ہر دو صورتوں میں ہے … تنگی کیساتھ آسانی والی بات سمجھ آنے لگتی ہے … پھر اچانک سے اصحابِ کہف کا خیال آتا ہے کہ انہوں نے بھی تو سیلف آئیسولیٹ لیا تھا … اور اسی میں بچت تھی … یونس علیہ السلام بھی تو مچھلی کے پیٹ میں سب سے الگ ہو گئے تھے … لیکن وہیں سے اللہ نے انہیں نئی زندگی دی … غارِ حرا کی آئیسولیٹڈ عبادتوں کا خیال آئے تو بھی سمجھ آتی ہے … کہ ہر وقت ہجوم ضروری نہیـں ہوتا …. اللہ سے تعلق بنانے کو کبھی آئیسولیشن اختیار کرنی پڑتی ہے … سیلف آئیسولیشن … بہار کے عظیم المر تبت صوفی حضرت شیخ شرف الد ین یحی منیری نے بھی تیس سالوں تک راجگیر کی وادیوں میں عبا د ت و ریاضت کی تھی تیس سالوں کی خلوت نشینی کے بعد انہیں معرفت الہی حاصل کی ۔۔پھر جلوت میں آ ئے ۔۔اللہ عزوجل کامل آسانیوں اور کامل عافیت کے معاملات فرمائیں … اللھم آمین ثمہ آمین یا رب العلمین ان شاء اللہ الرحمن الرحیم … محتاط رویہ ہی اس وقت عقلمندی ہے … رُک جانا ہی بہتر ہے … آئیسولیشن میں ہی خیر ہے اس لئے خدائی قہر عذاب الہی سے نجات کے لئے ضروری ہے کے ہم خلوت نشینی اختیار کریں اور رب کائنات سے گریہ و زاری کریں ۔گناہوں سے توبہ کریں ۔انشاء اللّه ضرور رحمت خدا وندی جوش میں آ ئے گی …….!!!*💞💞
اشرف استھا نوی

Leave A Reply

Your email address will not be published.