لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند مالیگاؤں کی اسکولیں بنی چوروں اور غنڈوں کا اڈہ

0
لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند مالیگاؤں کی اسکولیں بنی چوروں اور غنڈوں کا اڈہ
سلام چاچا گارڈن, نسیم مینانگری, نانڈیڑی اسکول، چراغ پرائمری اسکول ، دیگر سرکاری پرائمری اسکول اور مدنی ساٹھ فٹی روڈ اسکول گراؤنڈ میں جاری نشیلی ادویات کا دھندہ
پولیٹیکل مافیا کی سربراہی اور رشوت خور پولس انتظامیہ کے ڈر سے رہائشی عوام خاموش
مالیگاؤں (پریس ریلیز) پورے شہر کی حالت اتنی خراب ہوچکی ہے کہ کوئی پرسان حال نہیں ملتا. شہر کی نوجوان نسل نشے میں تباہ ہو رہی ہے. شہر میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند اسکولوں کو ڈرگ مافیا نے مرکز بنا لیا ہے اور اسکول کے بند کمروں, گارڈن کی جگہوں اور دیوار سے لگ کر کھوکھا نما کلب بنا کر نشیلی ادویات کا کھلے عام دھندہ کر رہے ہیں.  ان کے خلاف لوگ آواز بلند کرنے سے ڈرتے ہیں اور ان علاقوں میں لوگوں میں دہشت کا ماحول بنا ہوا ہے جس کی وجہ یہ دھندہ کرنے والے نہیں بلکہ کہ ان کے پیچھے پولیٹیکل مافیا اور رشوت خور پولس والے ہیں جنھوں نے انھیں پوری ڈھیل دے رکھی ہے.
مالیگاؤں شہر کی معروف سلام چاچا گراؤنڈ میونسپل پرائمری اسکول نمبر 73, آزاد نگر کی نسیم مینا نگری اسکول, مالدہ شیوار کے پاس نانڈیڑی اسکول, بھنگار بازار روڈ اسکول نمبر 14, ہنگلاج نگر اردو اسکول, مدنی نگر ساٹھ فٹی روڈ پر راحت ہاسپٹل کے پیچھے اور دیگر بند اسکولوں کے کمروں, گراؤنڈ اور دیوار سے لگ کر نشیلی ادویات کا زور دار کاروبار جاری ہے.
گزشتہ روز پولس انتظامیہ نے کروڑوں کا ڈرگ اور کچھ لوگوں کو گرفتار بھی کیا لیکن وہ صرف دس فیصد تھا باقی اب بھی شہر کے علاقوں میں بیچا جارہا ہے. شہر کو پوری طرح نشہ مکت کرنے کیلئے نشیلی ادویات کے بیوپاریوں کو گرفتار کرنا چاہئے اور شہر میں نشیلی ادویات کی درآمد پر سختی سے روک لگنا چاہئے. ایسے رشوت خور پولس والوں کا تبادلہ بھی ہونا چاہئے.
مالیگاؤں ڈیولپمنٹ فرنٹ کی جانب سے پولس انتظامیہ, اتی کرمن وبھاگ اور کارپوریشن انتظامیہ سے گزارش کی جاتی ہے کہ شہر میں جاری نشیلی ادویات کے مقام پر فوری کاروائی کی جائے. جن جن مقامات اور اسکولوں میں اتی کرمن پر کلب اور کھوکھا رکھا گیا ہے اسے ہٹایا جائے.نیز بند اسکولوں کے گراؤنڈ کو فوری طور پر وال کمپاؤنڈ بنا دیا جائے. تاکہ حالات معمول پر آنے کے بعد طلبہ اسکولوں میں راحت کے ساتھ تعلیم حاصل کرسکیں.

Leave A Reply

Your email address will not be published.